Home / علامہ اقبال شاعری

علامہ اقبال شاعری

علامہ اقبال شاعری Archives – Urdu Poetry Library

عورت

Johar Mard e Ayan Hota Hy By Mannat Gayer

جوہر مرد عياں ہوتا ہے بے منت غير غير کے ہاتھ ميں ہے جوہر عورت کي نمود راز ہے اس کے تپ غم کا يہي نکتہ شوق آتشيں ، لذت تخليق سے ہے اس کا وجود کھلتے جاتے ہيں اسي آگ سے اسرار حيات گرم اسي آگ سے ہے معرکہ …

Read More »

عورت اور تعليم

Tahzeeb e frangi Hy Agar Marg e Amomat

تہذيب فرنگي ہے اگر مرگ امومت ہے حضرت انساں کے ليے اس کا ثمر موت جس علم کي تاثير سے زن ہوتي ہے نا زن کہتے ہيں اسي علم کو ارباب نظر موت بيگانہ رہے ديں سے اگر مدرسہ زن ہے عشق و محبت کے ليے علم و ہنر موت …

Read More »

عورت کي حفاظت

Ek Zinda Haqeeqat Mere Seny Mein Hy Mastoor

اک زندہ حقيقت مرے سينے ميں ہے مستور کيا سمجھے گا وہ جس کي رگوں ميں ہے لہو سرد نے پردہ ، نہ تعليم ، نئي ہو کہ پراني نسوانيت زن کا نگہباں ہے فقط مرد جس قوم نے اس زندہ حقيقت کو نہ پايا اس قوم کا خورشيد بہت …

Read More »

آزادی نسواں

Is Byhas Ka Kuch Faisla Main Naheen Kar Sakta

اس بحث کا کچھ فيصلہ ميں کر نہيں سکتا گو خوب سمجھتا ہوں کہ يہ زہر ہے ، وہ قند کيا فائدہ ، کچھ کہہ کے بنوں اور بھي معتوب پہلے ہي خفا مجھ سے ہيں تہذيب کے فرزند اس راز کو عورت کي بصيرت ہي کرے فاش مجبور ہيں …

Read More »

عورت

Wajud e Zan Se Hy Tasveer Kainat Mein Rang

وجود زن سے ہے تصوير کائنات ميں رنگ اسي کے ساز سے ہے زندگي کا سوز دروں شرف ميں بڑھ کے ثريا سے مشت خاک اس کي کہ ہر شرف ہے اسي درج کا در مکنوں مکالمات فلاطوں نہ لکھ سکي ، ليکن اسي کے شعلے سے ٹوٹا شرار افلاطوں …

Read More »

خلوت

Ruswa Kia Is Door Ko Jalwat Ki Hawas Ne

رسوا کيا اس دور کو جلوت کي ہوس نے روشن ہے نگہ ، آئنہ دل ہے مکدر بڑھ جاتا ہے جب ذوق نظر اپني حدوں سے ہو جاتے ہيں افکار پراگندہ و ابتر آغوش صدف جس کے نصيبوں ميں نہيں ہے وہ قطرہ نيساں کبھي بنتا نہيں گوہر خلوت ميں …

Read More »

پردہ

Bahot Rang Badly Sapahr Bareen Nay

بہت رنگ بدلے سپہر بريں نے خدايا يہ دنيا جہاں تھي ، وہيں ہے تفاوت نہ ديکھا زن و شو ميں ميں نے وہ خلوت نشيں ہے ، يہ خلوت نشيں ہے ابھي تک ہے پردے ميں اولاد آدم کسي کي خودي آشکارا نہيں ہے  

Read More »

مرد فرنگ

Hzar Baar Hakeemu Nay Isko Sulghaya

ھزار بار حکیموں نے اس کو سلجھایا مگر یہ مسلہ زن رھا وہیں کا وہیں قصور زن کا نہیں ہے کچھ اس خرابی میں گواہ اس کی شرافت پہ ہیں مہ و پرویں فساد کا ہے فرنگی معاشرت میں ظہور کہ مرد سادہ ہے بیچارہ زن شناس نہیں

Read More »

غريب شہر ہوں ميں، سن تو لے مري فرياد

Gareeb Shaher Hun Main, Sun To Lay Mere Fryaad

(Armaghan-e-Hijaz-41) Sir Akbar Haideri, Sadar-e-Azam Haiderabad Dakkan Ke Naam (سر اکبر حیدری، صدر اعظم حیدرآباد دکن کے نام) To Sir Akbar Hyderi The Chief Minister Of Hyderabad Deccan (Armaghan-e-Hijaz-40) Ghareeb-e-Shehar Hun Mein, Sun To Le Meri Faryad (غریب شہر ہوں میں، سن تو لے میری فریاد) I am quiet a …

Read More »

آں عزم بلند آور آں سوز جگر آور

Aan Azm Buland Aawer Aan Sozay Jigr Aawer

(Armaghan-e-Hijaz-39) Aan Azam-e-Buland Awar Aan Soz-e-Jigar Awar (آن عزم بلند آور آن سوز جگر آور) Nourish that lofty will and burning heart آں عزم بلند آور آں سوز جگر آور شمشير پدر خواہي بازوے پدر آور Translitation Aan Azam-E-Buland Awar Aan Soz-E-Jigar Awar Shamsheer-E-Pidr Khawahi Bazoo’ay Padar Awar Nourish that lofty will and burning heart, get back your father’s arms if thou wish’st to have his sword.

Read More »

خود آگاہي نے سکھلا دي ہے جس کو تن فراموشي

Khudd Aagahii Nay Sikhla Di Hay Jisko Ten e Framooshi

(Armaghan-e-Hijaz-38) Khud Agahi Ne Sikhla Di Hai Jis Ko Tan Faramoshi (خود آگاہی نے سکھلا دی ہے جس کو تن فراموشی) Self‐awareness has made the mujahid forget his body خود آگاہی نے سکھلا دی ہے جس کو تن فراموشی حرام آئی ہے اس مرد مجاہد پر زرہ پوشی Translitation Khud …

Read More »

حاجت نہيں اے خطہ گل شرح و بياں کي

Hajat Nahi Ay Khitta e Gull Sharah o Biyaan Ki

(Armaghan-e-Hijaz-37) Hajat Nahin Ae Khita’ay Gul Sharah-o-Byan Ki (حاجت نہیں اے خطہ گل شرح و بیان کی) O land of charming and sweet flowers what need is there to explain حاجت نہيں اے خطہ گل شرح و بياں کي تصوير ہمارے دل پر خوں کي ہے لالہ تقدير ہے اک …

Read More »

ضمير مغرب ہے تاجرانہ، ضمير مشرق ہے راہبانہ

Zameer Magrib Hy Tajraana Zameer Mashriq Hy Rahibaana

(Armaghan-e-Hijaz-36) Zameer-e-Maghrib Hai Tajirana, Zameer-e-Mashriq Hai Rahbana  (ضمیر مغرب ہے تاجرانہ ، ضمیر مشرق ہے راہبانہ) ضمير مغرب ہے تاجرانہ، ضمير مشرق ہے راہبانہ وہاں دگرگوں ہے لحظہ لحظہ، يہاں بدلتا نہيں زمانہ کنار دريا خضر نے مجھ سے کہا بہ انداز محرمانہ سکندري ہو، قلندري ہو، يہ سب طريقے …

Read More »

چہ کافرانہ قمار حيات مي بازي

Chy Kafrana Qmaar e Hayat Mee Baazi

(Armaghan-e-Hijaz-35) Che Kafarana Qimar-e-Hayat Mee Bazi (چہ کافرانہ قمارحیات می بازی) How heretically do you play the game of life?   چہ کافرانہ قمار حيات مي بازي کہ با زمانہ بسازي بخود نمي سازي دگر بمدرسہ ہائے حرم نمي بينم دل جنيد و نگاہ غزالي و رازي بحکم مفتي اعظم …

Read More »

نشاں يہي ہے زمانے ميں زندہ قوموں کا

Nishaan Yahi Hay Zamany May Zinda Qoumoon Ka

(Armaghan-e-Hijaz-34) Nishan Yehi Hai Zamane Mein Zinda Qaumon Ka (نشان یہی ہے زمانے میں زندہ قوموں کا) It is the sign of living nations نشاں يہي ہے زمانے ميں زندہ قوموں کا کہ صبح و شام بدلتي ہيں ان کي تقديريں کمال صدق و مروت ہے زندگي ان کي معاف …

Read More »

دگرگوں جہاں ان کے زور عمل سے

Degr-goon Jahaan Inky Zoor e Amal Say

(Armaghan-e-Hijaz-33) Digargoon Jahan Un Ke Zor-e-Amal Se (دگرگوں جہاں ان کے زور عمل سے) The living nations of the world have won their laurels دگرگوں جہاں ان کے زور عمل سے بڑے معرکے زندہ قوموں نے مارے منجم کي تقويم فردا ہے باطل گرے آسماں سے پرانے ستارے ضمير جہاں …

Read More »

تمام عارف و عامي خودي سے بيگانہ

Tamaam Aarif wa Aamii Khudi Say Bygaana

(Armaghan-e-Hijaz-32) Tamam Arif-o-Aami Khudi Se Begana (تمام عارف و عامی خودی سے بیگانہ) All high and low are unaware of Khudi   تمام    عارف و عامي خودي سے بيگانہ کوئي بتائے يہ مسجد ہے يا کہ ميخانہ يہ راز ہم سے چھپايا ہے مير واعظ نے کہ خود حرم ہے …

Read More »

آزاد کي رگ سخت ہے مانند رگ سنگ

Aazad Ki Rug Sakht Hay Maninnd Rugg e Sung

(Armaghan-e-Hijaz-31) Azad Ki Rag Sakht Hai Manid Rag-e-Sang (آزاد کی رگ سخت ہے مانند رگ سنگ) A free man’s vein is hard like stone’s آزاد کي رگ سخت ہے مانند رگ سنگ محکوم کي رگ نرم ہے مانند رگ تاک محکوم کا دل مردہ و افسردہ و نوميد آزاد کا …

Read More »

کھلا جب چمن ميں کتب خانہء گل

Khula Jb Chamen May Kuttb Khana e Gull

(Armaghan-e-Hijaz-30) Khula Jab Chaman Mein Kutab Khana’ay Gul (کھلا جب چمن میں کتب خانہ گل) When flowers’ bookshop opened in the garden   کھلا جب چمن ميں کتب خانہء گل نہ کام آيا ملا کو علم کتابي متانت شکن تھي ہوائے بہاراں غزل خواں ہوا پيرک اندرابي کہا لالہ آتشيں …

Read More »

سمجھا لہو کی بوند اگر تو اسے تو خير

Samjha lahu Ki Boond Agr To Isy Tw Khair

(Armaghan-e-Hijaz-29) Samajha Lahoo Ki Boond Agar Tu Isse Tou Khair (سمجھا لہو کی بوند اگر تو اسے تو خیر) Thou think’st it a mere drop of blood; well سمجھا لہو کی بوند اگر تو اسے تو خير دل آدمی کا ہے فقط اک جذبہء بلند گردش مہ و ستارہ کي …

Read More »

نکل کر خانقاہوں سے ادا کر رسم شبيري

Nikal Kr Khanqahoon Say Ada Ker Rassem e Shabbiri

(Armaghan-e-Hijaz-28) Nikal Kar Khanqahon Se Ada Kar Rasm-e-Shabiri (نکل کر خانقاہوں سے ادا کر رسم شبیری) Come out of the monastery and play the role of Shabbir نکل کر خانقاہوں سے ادا کر رسم شبيري کہ فقر خانقاہي ہے فقط اندوہ و دلگيري ترے دين و ادب سے آ رہي …

Read More »

رندوں کو بھي معلوم ہيں صوفی کے کمالات

(Armaghan-e-Hijaz-27) Rindon Ko Bhi Maloom Hain Sufi Ke Kamalat (رندوں کو بھی معلوم ہیں صوفی کے کمالات) The dissolute know the Sufi’s accomplishments رندوں    کو بھي معلوم ہيں صوفي کے کمالات ہر چند کہ مشہور نہيں ان کے کرامات خود گيري و خودداري و گلبانگ ‘انا الحق’ آزاد ہو سالک …

Read More »

دراج کي پرواز ميں ہے شوکت شاہيں

Draaj Ki Parwaaz May Hy Shooket Shaheen

(Armaghan-e-Hijaz-26) Durraj Ki Parwaz Mein Hai Shaukat-e-Shaheen (The partridge flies with the majesty of the falcons) دراج    کي پرواز ميں ہے شوکت شاہيں حيرت ميں ہے صياد، يہ شاہيں ہے کہ دراج! ہر قوم کے افکار ميں پيدا ہے تلاطم مشرق ميں ہے فردائے قيامت کي نمود آج فطرت کے …

Read More »

گرم ہو جاتا ہے جب محکوم قوموں کا لہو

(Armaghan-e-Hijaz-25) Garam Ho Jata Hai Jab Mehkoom Qaumon Ka Lahoo (گرم ہو جاتا ہے جب محکوم قوموں کا لہو) When the enslaved people’s rage boils گرم ہو جاتا ہے جب محکوم قوموں کا لہو تھرتھراتا ہے جہان چار سوے و رنگ و بو پاک ہوتا ہے ظن و تخميں سے …

Read More »

آج وہ کشمير ہے محکوم و مجبور و فقير

Aaj Wo Kashmiir Hay Mehkoom o Majboor o Faqeer

(Armaghan-e-Hijaz-24) Aaj Woh Kashmir Hai Mehkoom-o-Majboor-o-Faqeer (آج وہ کشمیر ہے محکوم و مجبور و فقیر) Today that land of Kashmir, under the heels of the enemy, has become weak, helpless & poor آج    وہ کشمير ہے محکوم و مجبور و فقير کل جسے اہل نظر کہتے تھے ايران صغير سينہء …

Read More »

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامي ہے نام

Moot Hay Ik Sakhat Ter Jiska Gulami Hy Name

(Armaghan-e-Hijaz-23) Mout Hai Ek Sakht Ter Jis Ka Ghulami Hai Naam (موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام) Harder than death is what thou call’st slavery موت    ہے اک سخت تر جس کا غلامي ہے نام مکر و فن خواجگي کاش سمجھتا غلام شرع ملوکانہ ميں جدت …

Read More »

پاني ترے چشموں کا تڑپتا ہوا سيماب

Pani Tery Chasmun Ka Tarpta Hwa Seemaab

(Armaghan-e-Hijaz-22) Mullah Zadeh Zaigham Lolabi Kashmiri Ka Bayaz (ملا زادہ ضیغم لولابی کشمیری کا بیاض) The Poetic Notebook Of Mullazade Zaigham Of Laulab پاني ترے چشموں کا تڑپتا ہوا سيماب مرغان سحر تيري فضاؤں ميں ہيں بيتاب اے وادي لولاب گر صاحب ہنگامہ نہ ہو منبر و محراب ديں بندئہ …

Read More »

حضرت انسان

Jahan may Danish o Binish Ki Hy Kis Darja Arzaani

(Armaghan-e-Hijaz-43-Book Complete) Hazrat-e-Insan (حضرت انسان) The Human Being جہاں ميں دانش و بينش کي ہے کس درجہ ارزاني کوئي شے چھپ نہيں سکتي کہ يہ عالم ہے نوراني کوئي ديکھے تو ہے باريک فطرت کا حجاب اتنا نماياں ہيں فرشتوں کے تبسم ہائے پنہاني يہ دنيا دعوت ديدار ہے فرزند …

Read More »

حسين احمد

Ajm Hanooz Ndaaned Ramooz Din, Wrna

(Armaghan-e-Hijaz-42) Hussain Ahmad (حسین احمد) عجم ہنوز نداند رموز ديں، ورنہ ز ديوبند حسين احمد! ايں چہ بوالعجبي است سرود بر سر منبر کہ ملت از وطن است چہ بے خبر ز مقام محمد عربي است بمصطفي برساں خويش را کہ ديں ہمہ اوست اگر بہ او نرسيدي ، تمام …

Read More »

سر اکبرحيدري، صدر اعظم حيدر آباد دکن کے نام

Tha Ye Allah Ka Farmaan Keh Shikwah Parweez

سر اکبرحيدري، صدر اعظم حيدر آباد دکن کے نام ‘يوم اقبال’ کے موقع پر توشہ خانہ حضور نظام کي طرف سے ، جو صاحب صدر اعظم کے ماتحت ہے ايک ہزار روپے کا چيک بطور تواضع وصول ہونے پر تھا يہ اللہ کا فرماں کہ شکوہ پرويز دو قلندر کو …

Read More »

کبھي دريا سے مثل موج ابھر کر

(Armaghan-e-Hijaz-21) Kabhi Darya Se Misel-e-Mouj Ubhar Kar (کبھی دریا سے مثل موج ابھر کر) Sometimes by rising from the ocean like a wave کبھی دريا سے مثل موج ابھر کر کبھی دريا کے سينے ميں اتر کر کبھی دريا کے ساحل سے گزر کر مقام اپنی خودی کا فاش تر …

Read More »

خرد ديکھے اگر دل کی نگہ سے

Khird Dekhe Agar Dil Ki Nigah Se

(Armaghan-e-Hijaz-20) Khirad Dekhe Agar Dil Ki Nigah Se If with the heart’s eye the intellect would see aright خرد ديکھے اگر دل کی نگہ سے جہاں روشن ہے نور ‘لا الہ’ سے فقط اک گردش شام و سحر ہے اگر ديکھيں فروغ مہر و مہ سے ———— Transliteration Khird Dekhe Agar Dil …

Read More »

ترے دريا ميں طوفاں کيوں نہيں ہے

Tere Darya Mein Toofan Kyun Nahin Hai

(Armaghan-e-Hijaz-19) Tere Darya Mein Toofan Kyun Nahin Hai ?Why is there no storm in your sea ترے دريا ميں طوفاں کيوں نہيں ہے خودی تيری مسلماں کيوں نہيں ہے عبث ہے شکوئہ تقدير يزداں تو خود تقدير يزداں کيوں نہيں ہے? ————— Transliteration Tere Darya Mein Toofan Kyun Nahin Hai …

Read More »

نہ کر ذکر فراق و آشنائی

Na Kar Zikr-E-Firaaq-O-Ashnaai

(Armaghan-e-Hijaz-18) Na Kar Zikr -e-Firaq-o-Ashnayi ( نہ کر ذکر و فراق آشنائی) Of love and losing what words need be said? نہ کر ذکر فراق و آشنائی کہ اصل زندگی ہے خود نمائی نہ دريا کا زياں ہے، نے گہر کا دل دريا سے گوہر کی جدائی ————– Transliteration Na …

Read More »

تميز خار و گل سے آشکارا

Tameez Khaar wa Gull Say Aashikara

(Armaghan-e-Hijaz-17) Tameez-e-Khar-o-Gul Se Ashakara Is apparent from discrimination between flowers and thorns   تميز خار و گل سے آشکارا نسيم صبح کی روشن ضميری حفاظت پھول کی ممکن نہيں ہے اگر کانٹے ميں ہو خوئے حريری ———– Transliteration Tameez-E-Khaar-O-Gul Se Ashakara Naseem-E-Suba Ki Roshan Zameeri The clairvoyance of the zephyr Is apparent from its discrimination between flowers and thorns! Hifazat Phool Ki …

Read More »

حديث بندئہ مومن دل آويز

Hadees-E-Banda’ay Momin Dil Awaiz

(Armaghan-e-Hijaz-16) Hadees-e-Banda’e Momin Dil Awaiz The talk of Muslim is interesting حديث بندئہ مومن دل آويز جگر پر خوں، نفس روشن، نگہ تيز ميسر ہو کسے ديدار اس کا کہ ہے وہ رونق محفل کم آميز ————– Transliteration Hadees-E-Banda’ay Momin Dil Awaiz Jigar Pur Khoon, Nafs Roshan, Nigah Taiz The talk of Muslim is interesting, His heart warm, breath light and gaze arresting. Muyassar Ho Kise Didar …

Read More »

کہن ہنگامہ ہائے آرزو سرد

Kihan Hangama Ha’ay Arzoo e Sard

(Armaghan-e-Hijaz-15) Kuhan Hangama Haye Arzoo Sard (کہن ہنگامہ ہاے آرزو سرد) The old flame of desires has grown cold کہن ہنگامہ ہائے آرزو سرد کہ ہے مرد مسلماں کا لہو سرد بتوں کو ميری لادينی مبارک کہ ہے آج آتش ‘اللہ ھو، سرد ———— Transliteration Kuhan Hangama Ha’ay Arzoo Sard Kh Hai Mard-e-Musalman Ka Lahoo Sard The old flame of desires has grown cold …

Read More »

کہا اقبال نے شيخ حرم سے

Kaha Iqbal Ne Sheikh-E-Haram Se

(Armaghan-e-Hijaz-14) Kaha Iqbal Ne Sheikh-e-Haram Se (کہا اقبال نے شیخ حرم سے) Iqbal said to the Shaykh of the Ka’bah کہا اقبال نے شيخ حرم سے تہ محراب مسجد سو گيا کون ندا مسجد کی ديواروں سے آئي فرنگی بت کدے ميں کھو گيا کون؟ ————- Transliteration Kaha Iqbal Ne …

Read More »

خرد کی تنگ دامانی سے فرياد

Khirad Ki Tang Damaani Se Faryad

(Armaghan-e-Hijaz-13) Khirad Ki Tang Daamani Se Faryad (خرد کی تنگ دامانی سے فریاد) Rescue me please from wisdom’s narrowness خرد کی تنگ دامانی سے فرياد تجلی کی فراوانی سے فرياد گوارا ہے اسے نظارئہ غير نگہ کی نا مسلمانی سے فرياد ————– Transliteration Khirad Ki Tang Damaani Se Faryad Tajali Ki Farawani Se Faryad Rescue me please from wisdom’s narrowness …

Read More »

غريبی ميں ہوں محسود اميری

Ghareebi Mein Hon Mehsood-E-Ameeri

(Armaghan-e-Hijaz-12) Ghareebi Mein Hun Mehsud-e-Ameeri (غریبی میں ہوں محسود امیری) My poor estate makes proud men covetous غريبی ميں ہوں محسود اميری کہ غيرت مند ہے ميری فقيری حذر اس فقر و درويشی سے، جس نے مسلماں کو سکھا دی سر بزيری ———– Transliteration Ghareebi Mein Hon Mehsood-E-Ameeri Ke Ghairatmand …

Read More »

دگرگوںعالم شام و سحر کر

Digargoon Alam-E-Shaam-O-Sahar Kar

(Armaghan-e-Hijaz-11) Digargoon Alam-e-Sham-o-Sahar Kar (دگرگوں عالم شام و سحر کر) Upset this world of morn and eve دگرگوں عالم شام و سحر کر جہان خشک و تر زير و زبر کر رہے تيری خدائی داغ سے پاک مرے بے ذوق سجدوں سے حذر کر ————– Transliteration Digargoon Alam-E-Shaam-O-Sahar Kar Jahan-E-Khusk-O-Tar …

Read More »

فراغت دے اسے کار جہاں سے

Faraghat De Usse Kar-E-Jahan Se

(Armaghan-e-Hijaz-10) Faraghat De Usse Kaar-e-Jahan Se (فراغت دے اس کار جہاں سے) Set him free of this world’s affairs فراغت دے اسے کار جہاں سے کہ چھوٹے ہر نفس کے امتحاں سے ہوا پيری سے شيطاں کہنہ انديش گناہ تازہ تر لائے کہاں سے ————- Transliteration Faraghat De Usse Kar-E-Jahan …

Read More »

مري شاخ امل کا ہے ثمر کيا

Meri Shakh-E-Amal Ka Hai Samar Kya

(Armaghan-e-Hijaz-09) Rubaiyat – Meri Shakh-e-Amal Ka hai Samar Kya (رباعیات: میری شاخ امل کا ہے ثمر کیا) What fruit will the bough of my hope bear مري شاخ امل کا ہے ثمر کيا تري تقدير کي مجھ کو خبر کيا کلي گل کي ہے محتاج کشود آج نسيم صبح فردا پر نظر کيا ———— Transliteration Rubaiyat QUATRAINS Meri …

Read More »

آواز غيب

Ati Hai Dam-E-Subah Sadda Arsh-E-Bareen Se

(Armaghan-e-Hijaz-08) Awaz-e-Ghaib (آواز غیب) A Voice From Beyond آتي ہے دم صبح صدا عرش بريں سے کھويا گيا کس طرح ترا جوہر ادراک! کس طرح ہوا کند ترا نشتر تحقيق ہوتے نہيں کيوں تجھ سے ستاروں کے جگر چاک تو ظاہر و باطن کي خلافت کا سزاوار کيا شعلہ بھي ہوتا …

Read More »

مسعود مرحوم

(Armaghan-e-Hijaz-07) Masood Marhoom (مسعود مرحوم) The Late Masud يہ مہر و مہ، يہ ستارے يہ آسمان کبود کسے خبر کہ يہ عالم عدم ہے يا کہ وجود خيال جادہ و منزل فسانہ و افسوں کہ زندگي ہے سراپا رحيل بے مقصود رہي نہ آہ ، زمانے کے ہاتھ سے باقي …

Read More »

دوزخي کی مناجات

Iss Dair-e-Kuhan Mein Hain Gharzmand Poojari

(Armaghan-e-Hijaz-06) Dozakhi Ki Munajat (دوزخی کی مناجات) Litany Of The Damned اس دير کہن ميں ہيں غرض مند پجاري رنجيدہ بتوں سے ہوں تو کرتے ہيں خدا ياد پوجا بھي ہے بے سود، نمازيں بھي ہيں بے سود قسمت ہے غريبوں کي وہي نالہ و فرياد ہيں گرچہ بلندي ميں …

Read More »

معزول شہنشاہ

Ho Mubarik Uss Shahenshah-e-Nikofar Jaam Ko

(Armaghan-e-Hijaz-05) Maazool Shahenshah (معزول شہنشاہ) (A Deposed Monarch)   Mazool Shahenshah A DEPOSED MONARCH Ho Mubarik Uss Shahenshah-e-Nikofar Jaam Ko Jis Ki Qurbani Se Asrar-e-Mulookiyat Hain Faash Good luck to that King, cashiered so gracefully, whose Dismissal shows how a ruling Power behaves! ‘Shah’ Hai Bartanvi Mandar Mein Ek Mitti Ka But Jis Ko Kar Sakte Hain, Jab Chahain Poojari Paash Paash In Britain’s fane the King is only a plaster Image its worshippers smash whenever they choose; Hai …

Read More »

عالم برزخ

Kya Shay Hai, Kis Amroz Ka Farda Hai Qayamat

(Armaghan-e-Hijaz-04) Alam-e-Barzakh (عالم برزخ) The State of Barzakh ( Read Explanation here – نظم کی تشریح یہاں پڑھیں) مردہ اپني قبر سے کيا شے ہے، کس امروز کا فردا ہے قيامت اے ميرے شبستاں کہن! کيا ہے قيامت؟ قبر اے مردئہ صد سالہ! تجھے کيا نہيں معلوم؟ ہر موت کا پوشيدہ تقاضا …

Read More »

تصوير و مصور

Kaha Tasveer Ne Tasweer Gar Se

(Armaghan-e-Hijaz-03) Tasveer-o-Musawir (تصویر و مصور) Painting and Painter تصوير کہا تصوير نے تصوير گر سے نمائش ہے مري تيرے ہنر سے وليکن کس قدر نا منصفي ہے کہ تو پوشيدہ ہو ميري نظر سے! مصور گراں ہے چشم بينا ديدہ ور پر جہاں بيني سے کيا گزري شرر پر! نظر …

Read More »