Home / علامہ اقبال شاعری / يہ مدرسہ يہ کھيل يہ غوغائے روارو
Ye Madrassa Ye Khail Ye Googaa e Rwaroo

يہ مدرسہ يہ کھيل يہ غوغائے روارو

يہ مدرسہ يہ کھيل يہ غوغائے روارو
اس عيش فراواں ميں ہے ہر لحظہ غم نو
وہ علم نہيں ، زہر ہے احرار کے حق ميں
جس علم کا حاصل ہے جہاں ميں دو کف جو
ناداں ! ادب و فلسفہ کچھ چيز نہيں ہے
اسباب ہنر کے ليے لازم ہے تگ و دو
فطرت کے نواميس پہ غالب ہے ہنر مند
شام اس کي ہے مانند سحر صاحب پرتو

وہ صاحب فن چاہے تو فن کي برکت سے
ٹپکے بدن مہر سے شبنم کي طرح ضو

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے