کبھي دريا سے مثل موج ابھر کر

(Armaghan-e-Hijaz-21)

Kabhi Darya Se Misel-e-Mouj Ubhar Kar

(کبھی دریا سے مثل موج ابھر کر)

Sometimes by rising from the ocean like a wave

کبھی دريا سے مثل موج ابھر کر
کبھی دريا کے سينے ميں اتر کر
کبھی دريا کے ساحل سے گزر کر
مقام اپنی خودی کا فاش تر کر

Transliteration

Kabhi Darya Se Misl-E-Mouj Ubhar Kar
Kabhi Darya Ke Sinay Mein Utar Kar

Sometimes by rising from the ocean like a wave,
Occasionally like a diver in its bosom behave.

Kabhi Darya Ke Sahil Se Guzar Kar
Maqam Apni Khudi Ka Faash Tar Kar!

At times cross beyond the ocean’s shore
To expose better your self’s real enclave.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے