Na Kar Zikr-E-Firaaq-O-Ashnaai

نہ کر ذکر فراق و آشنائی

(Armaghan-e-Hijaz-18)

Na Kar Zikr -e-Firaq-o-Ashnayi

( نہ کر ذکر و فراق آشنائی)

Of love and losing what words need be said?

نہ کر ذکر فراق و آشنائی
کہ اصل زندگی ہے خود نمائی
نہ دريا کا زياں ہے، نے گہر کا
دل دريا سے گوہر کی جدائی

————–

Transliteration

Na Kar Zikr-E-Firaq-O-Ashanai
Ke Asal-E-Zindagi Hai Khud-Numai

Of love and losing what words need be said?
The self’s unfolding is Life’s fountain‐head;

Na Darya Ka Zayan Hai, Ne Guhar Ka
Dil-E-Darya Se Gohar Ki Judai

There’s neither loss to ocean nor to pearl
In the pearl’s loosening from the ocean’s bed.

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے