Home / علامہ اقبال شاعری / با نگ درا / بانگ درا (حصہ سوم) / با نگ درا – ظریفانہ – (حصہ سوم)

با نگ درا – ظریفانہ – (حصہ سوم)

با نگ درا – ظریفانہ – (حصہ سوم) Archives – Urdu Poetry Library

مسجد تو بنا دی شب بھر ميں ايماں کی حرارت والوں نے

Masjid To Bana Di Shab Bhar Main

مسجد تو بنا دي شب بھر ميں ايماں کي حرارت والوں نے من اپنا پرانا پاپي ہے، برسوں ميں نمازي بن نہ سکا کيا خوب امير فيصل کو سنوسي نے پيغام ديا تو نام و نسب کا حجازي ہے پر دل کا حجازي بن نہ سکا تر آنکھيں تو ہو …

Read More »

سنا ہے ميں نے، کل يہ گفتگو تھي کارخانے ميں

Sona Hay Men Nay, Kal Ye Gugtago Thi Karkhany Main

سنا ہے ميں نے، کل يہ گفتگو تھي کارخانے ميں پرانے جھونپڑوں ميں ہے ٹھکانا دست کاروں کا مگر سرکار نے کيا خوب کونسل ہال بنوايا کوئي اس شہر ميں تکيہ نہ تھا سرمايہ داروں کا ——————– Transliteration Suna Hai Main Ne, Kal Ye Guftagoo Thi Karkhane Mein Purane Jhonparon …

Read More »

کارخانےکا ہے مالک مردک ناکردہ کار

Karkhany Ka Hay Maalink Mardak Na Karda Kar

کارخانے کا ہے مالک مردک ناکردہ کار عيش کا پتلا ہے، محنت ہے اسے ناسازگار حکم حق ہے ليس للا نسان الا ماسعي کھائے کيوں مزدور کي محنت کا پھل سرمايہ دار ———————- Transliteration Karkhane Ka Hai Malik Mardak-e-Na Kardah Kaar Aysh Ka Putla Hai, Mehnat Hai Isse Na-Saazgar Hukm-e-Haq …

Read More »

اٹھا کر پھينک دو باہر گلی ميں

Otha Kar Phenk Do Bahar Gali

اٹھا کر پھينک دو باہر گلي ميں نئي تہذيب کے انڈے ہيں گندے الکشن، ممبري، کونسل، صدارت بنائے خوب آزادي نے پھندے مياں نجار بھي چھيلے گئے ساتھ نہايت تيز ہيں يورپ کے رندے ——————- Transliteration Utha Kar Phaink Do Bahir Gali Mein Nayi Tehzeeb Ke Ande Hain Gande Election, …

Read More »

تکرارتھي مزارع و مالک ميں ايک روز

Takrar The Mazaraa o Maalik Main Aik Rooz

تکرار تھي مزارع و مالک ميں ايک روز دونوں يہ کہہ رہے تھے، مرا مال ہے زميں کہتا تھا وہ، کرے جو زراعت اسي کا کھيت کہتا تھا يہ کہ عقل ٹھکانے تري نہيں پوچھا زميں سے ميں نے کہ ہے کس کا مال تو بولي مجھے تو ہے فقط …

Read More »

شام کي سرحد سے رخصت ہے وہ رند لم يزل

Shaam Ki Sarhad Say Rukhsat Hay Wo Rind Lam Yazal

شام کي سرحد سے رخصت ہے وہ رند لم يزل رکھ کے ميخانے کے سارے قاعدے بالائے طاق يہ اگر سچ ہے تو ہے کس درجہ عبرت کا مقام رنگ اک پل ميں بدل جاتا ہے يہ نيلي رواق حضرت کرزن کو اب فکر مداوا ہے ضرور حکم برداري کے معدے ميں ہے درد لايطاق وفد ہندستاں …

Read More »

محنت و سرمايہ دنيا ميں صف آرا ہو گئے

Mahnat o Sarmaya Dunya Main Saf Aaraa Ho Gay

محنت و سرمايہ دنيا ميں صف آرا ہو گئے ديکھے ہوتا ہے کس کس کي تمنائوں کا خون حکمت و تدبير سے يہ فتنہ آشوب خيز وقد کنتم بہ تستعجلونٹل نہيں سکتا ، ، ‘کھل گئے، ياجوج اور ماجوج کے لشکر تمام ينسلونچشم مسلم ديکھ لے تفسير حرف ——————– Transliteration Mehnat-o-Sarmaya …

Read More »

يہ آيہ نو ، جيل سے نازل ہوئي مجھ پر

Ye Aaya Nu, Jail Say Naazil Hoi Mjh Par

يہ آيہ نو ، جيل سے نازل ہوئي مجھ پر گيتا ميں ہے قرآن تو قرآن ميں گيتا کيا خوب ہوئي آشتي شيخ و برہمن اس جنگ ميں آخر نہ يہ ہارا نہ وہ جيتا مندر سے تو بيزار تھا پہلے ہي سے ‘بدري’ مسجد سے نکلتا نہيں، ضدي ہے …

Read More »

رات مچھر نے کہہ ديا مجھ سے

Raat Machar Nay Kah Dia Mjh Say

رات مچھر نے کہہ ديا مجھ سے ماجرا اپنی ناتمامی کا مجھ کو ديتے ہيں ايک بوند لہو صلہ شب بھر کی تشنہ کامی کا اور يہ بسوہ دار، بے زحمت پی گيا سب لہو اسامی کا ——————- Transliteration Raat Machar Ne Keh Diya Mujh Se Majra Apni Na-Tamami Ka …

Read More »

گائےاک روز ہوئی اونٹ سے يوں گرم سخن

Gaay Ik Rooz Hoi Oont Say Youn Garam Sukhan

گائے اک روز ہوئي اونٹ سے يوں گرم سخن نہيں اک حال پہ دنيا ميں کسي شے کو قرار ميں تو بد نام ہوئي توڑ کے رسي اپني سنتي ہوں آپ نے بھي توڑکے رکھ دي ہے مہار ہند ميں آپ تو از روئے سياست ہيں اہم ريل چلنے سے …

Read More »

ديکھیے چلتی ہے مشرق کی تجارت کب تک

Dekhiay Chalti Hay Mashriq Ki Tijarat Kab Tak

ديکھیے چلتی ہے مشرق کی تجارت کب تک شيشہ ديں کے عوض جام و سبو ليتا ہے ہے مداوائے جنون نشتر تعليم جديد ميرا سرجن رگ ملت سے لہو ليتا ہے —————— Transliteration Dekhiye Chalti Hai Mashriq Ki Tijarat Kab Tak Shisha-e-Deen Ke Ewz Jaam-o-Saboo Leta Hai Hai Madawaye Junoon …

Read More »

فرما رہے تھے شيخ طريق عمل پہ وعظ

Farma Rahy They Shiekh Tareeq Amal Pay Waaz

فرما رہے تھے شيخ طريق عمل پہ وعظ کفار ہند کے ہيں تجارت ميں سخت کوش مشرک ہيں وہ جو رکھتے ہيں مشرک سے لين دين ليکن ہماري قوم ہے محروم عقل و ہوش ناپاک چيز ہوتي ہے کافر کے ہاتھ کي سن لے، اگر ہے گوش مسلماں کا حق …

Read More »

دليل مہر و وفا اس سے بڑھ کے کيا ہوگی

Dalil Mahr o Wafa IS Say Barh Kay Kia

دليل مہر و وفا اس سے بڑھ کے کيا ہوگي نہ ہو حضور سے الفت تو يہ ستم نہ سہيں مصر ہے حلقہ ،کميٹي ميں کچھ کہيں ہم بھي مگر رضائے کلکٹر کو بھانپ ليں تو کہيں سند تو ليجيے ، لڑکوں کے کام آئے گي وہ مہربان ہيں اب، …

Read More »

ممبری امپيريل کونسل کی کچھ مشکل نہيں

Memberi Imperial Council Ki Kuch Mushkil Nai

ممبري امپيريل کونسل کي کچھ مشکل نہيں ووٹ تو مل جائيں گے ، پيسے بھي دلوائيں گے کيا؟ ميرزا غالب خدا بخشے ، بجا فرما گئے ”ہم نے يہ ماناکہ دلي ميں رہيں، کھائيں گے کيا؟ ——————— Transliteration Memberi Imperial Council Ki Kuch Mushkil Nahin Vote To Mil Jaen Ge, …

Read More »

ناداں تھے اس قدر کہ نہ جاني عرب کي قدر

Nadan Thy Is Qadar Ky Na Jaani Arab Ki Qadar

ناداں تھے اس قدر کہ نہ جاني عرب کي قدر حاصل ہوا يہي، نہ بچے مار پيٹ سے مغرب ميں ہے جہاز بياباں شتر کا نام ترکوں نے کام کچھ نہ ليا اس فليٹ سے ——————– Transliteration Nadan The Iss Qadar Ke Na Jani Arab Ki Qadar Hasil Huwa Yehi, …

Read More »

وہ مس بولي ارادہ خودکشي کا جب کيا ميں نے

Wo Mis Booli Irada Khud'Kashi Ka Jab Kia Main Nay

وہ مس بولي ارادہ خودکشي کا جب کيا ميں نے مہذب ہے تو اے عاشق! قدم باہر نہ دھر حد سے نہ جرات ہے ، نہ خنجر ہے تو قصد خودکشي کيسا يہ مانا درد ناکامي گيا تيرا گزر حد سے کہا ميں نے کہ اے جاں جہاں کچھ نقد …

Read More »

اصل شہود و شاہد و مشہود ايک ہے

Asal Shahood o Shaahid o Mash'hood Aek Hay

اصل شہود و شاہد و مشہود ايک ہے غالب کا قول سچ ہے تو پھر ذکر غير کيا کيوں اے جناب شيخ! سنا آپ نے بھي کچھ کہتے تھے کعبے والوں سے کل اہل دير کيا ہم پوچھتے ہيں مسلم عاشق مزاج سے الفت بتوں سے ہے تو برہمن سے …

Read More »

ہم مشرق کے مسکينوں کا دل مغرب ميں جا اٹکا ہے

Ham Mashriq Kay Maskeenu Ka Dil Maghrib Main Ja Atka Hay

ہم مشرق کے مسکينوں کا دل مغرب ميں جا اٹکا ہے واں کنڑ سب بلوري ہيں ياں ايک پرانا مٹکا ہے اس دور ميں سب مٹ جائيں گے، ہاں! باقي وہ رہ جائے گا جو قائم اپني راہ پہ ہے اور پکا اپني ہٹ کا ہے اے شيخ و برہمن، …

Read More »

انتہا بھي اس کي ہے آخر خريديں کب تلک؟

Intihaa Bhi Is Ki Hay Aakhir Khareedin Gy Kab Talak

انتہا بھي اس کي ہے آخر خريديں کب تلک چھترياں، رومال، مفلر، پيرہن جاپان سے اپني غفلت کي يہي حالت اگر قائم رہي آئيں گے غسال کابل سے ،کفن جاپان سے ———————- Transliteration Intiha Bhi Iss Ki Hai? Akhir Khareedain Kab Talak Chatriyan, Rumal, Maflar, Pairhan Japan Se Apni Ghaflat …

Read More »

تہذيب کے مريض کو گولی سے فائدہ

Tahzeeb Ky Mareez Ko Goli Sa Faaida

تہذيب کے مريض کو گولي سے فائدہ دفع مرض کے واسطے پل پيش کيجيے تھے وہ بھي دن کہ خدمت استاد کے عوض دل چاہتا تھا ہديہء دل پيش کيجيے بدلا زمانہ ايسا کہ لڑکا پس از سبق کہتا ہے ماسٹر سے کہ ”بل پيش کيجيے ——————- Transliteration Tehzeeb Ke …

Read More »

کچھ غم نہيں جو حضرت واعظ ہيں تنگدست

Kuch Gham Jo Hazrt Waaz Hain Tang Dast

کچھ غم نہيں جو حضرت واعظ ہيں تنگ دست تہذيب نو کے سامنے سر اپنا خم کريں رد جہاد ميں تو بہت کچھ لکھا گيا ترديد حج ميں کوئي رسالہ رقم کريں —————– Transliteration Kuch Gham Nahin Jo Hazrat-e-Waaiz Hain Tang Dast Tehzeeb-e-Nau Ke Samne Sar Apna Kham Karain Rad-e-Jihad …

Read More »

تعليم مغربی ہے بہت جرات آفريں

Taaleem Maghrebi Hay Bahot Jurrat Aafreen

تعليم مغربي ہے بہت جرات آفريں پہلا سبق ہے، بيٹھ کے کالج ميں مار ڈينگ بستے ہيں ہند ميں جو خريدار ہي فقط آغا بھي لے کے آتے ہيں اپنے وطن سے ہينگ ميرا يہ حال، لوٹ کي ٹو چاٹتا ہوں ميں ان کا يہ حکم، ديکھ! مرے فرش پر …

Read More »