Karkhany Ka Hay Maalink Mardak Na Karda Kar

کارخانےکا ہے مالک مردک ناکردہ کار

کارخانے کا ہے مالک مردک ناکردہ کار
عيش کا پتلا ہے، محنت ہے اسے ناسازگار
حکم حق ہے ليس للا نسان الا ماسعي
کھائے کيوں مزدور کي محنت کا پھل سرمايہ دار

———————-

Transliteration

Karkhane Ka Hai Malik Mardak-e-Na Kardah Kaar
Aysh Ka Putla Hai, Mehnat Hai Isse Na-Saazgar

Hukm-e-Haq Hai Lesa Lil-Insani Illah Ma Sa’aa
Khaye Kyun Mazdoor Ki Mehnat Ka Phal Sarmaya-Dar

—————–

The owner of the factory is a useless man
He is very pleasure loving, hard work does not suit him

God’s command is “Laisa lil Insani Illa Ma Sa’a”
Fruit of laborer’s work should not be usurped by the capitalist

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے