Home / علامہ اقبال شاعری / با نگ درا / بانگ درا (حصہ سوم) / با نگ درا - ظریفانہ - (حصہ سوم) / سنا ہے ميں نے، کل يہ گفتگو تھي کارخانے ميں
Sona Hay Men Nay, Kal Ye Gugtago Thi Karkhany Main

سنا ہے ميں نے، کل يہ گفتگو تھي کارخانے ميں

سنا ہے ميں نے، کل يہ گفتگو تھي کارخانے ميں
پرانے جھونپڑوں ميں ہے ٹھکانا دست کاروں کا
مگر سرکار نے کيا خوب کونسل ہال بنوايا
کوئي اس شہر ميں تکيہ نہ تھا سرمايہ داروں کا

——————–

Transliteration

Suna Hai Main Ne, Kal Ye Guftagoo Thi Karkhane Mein
Purane Jhonparon Mein Hai Thikana Dast Karwan Ka

Magar Sarkar Ne Kya Khoob Council Haal Banwaya
Koi Iss Sheher Mein Takiya Na Tha Sarmaya Daron Ka

——————-

I have heard this was the talk in the factory yesterday
“The artisans only in old huts have their abode

But what a good council hall the government has made
In this city the capitalists did not have any abode”

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے