Raat Machar Nay Kah Dia Mjh Say

رات مچھر نے کہہ ديا مجھ سے

رات مچھر نے کہہ ديا مجھ سے
ماجرا اپنی ناتمامی کا
مجھ کو ديتے ہيں ايک بوند لہو
صلہ شب بھر کی تشنہ کامی کا
اور يہ بسوہ دار، بے زحمت
پی گيا سب لہو اسامی کا

——————-

Transliteration

Raat Machar Ne Keh Diya Mujh Se
Majra Apni Na-Tamami Ka

Mujh Ko Dete Hain Aik Boond Lahoo
Sila Shab Bhar Ki Tashna Kaami Ka

Aur Ye Biswadar Be-Zehmat
Pe Gya Sub Lahoo Asami Ka

——————-

Last night the mosquito related to me
The whole story of his failures

“They give me only one drop of blood
In return for the whole night’s labor

And this land owner without any effort
Sucked all the blood of the cultivator”

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے