خودي

خودي کو نہ دے سيم و زر کے عوض
نہيں شعلہ ديتے شرر کے عوض
يہ کہتا ہے فردوسي ديدہ ور
عجم جس کے سرمے سے روشن بصر

”ز بہر درم تند و بدخو مباش
تو بايد کہ باشي ، درم گو مباش

—————————-

Transliteration

Khudi Ko Na De Seem-o-Zar Ke Ewaz
Nahin Shaola Dete Sharar Ke Ewaz

Ye Kehta Hai Firdousi-e-Didahwar
Ajam Jis Ke Surme Se Roshan Basar

“Zabar-e-Daram Tund-o-Bad Kho Mabash
Tu Bayad Ke Bashi, Daram Go Mabash”

————————–

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے