Jo Bat Haq Hu, Wo Mjhsay Chupi Nhi Rehti

لادين سياست

جو بات حق ہو ، وہ مجھ سے چھپي نہيں رہتي
خدا نے مجھ کو ديا ہے دل خبير و بصير
مري نگاہ ميں ہے يہ سياست لا ديں
کنيز اہرمن و دوں نہاد و مردہ ضمير
ہوئي ہے ترک کليسا سے حاکمي آزاد
فرنگيوں کي سياست ہے ديو بے زنجير

متاع غير پہ ہوتي ہے جب نظر اس کي
تو ہيں ہراول لشکر کليسيا کے سفير

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے