با ل جبر یل - رباعيات

وہ ميرا رونق محفل کہاں ہے

وہ ميرا رونق محفل کہاں ہے
مری بجلی ، مرا حاصل کہاں ہے
مقام اس کا ہے دل کی خلوتوں ميں
خدا جانے مقام دل کہاں ہے

———————

Transliteration

Woh Mera Ronaq-e-Mehfil Kahan Hai
Meri Bijli, Mera Hasil Kahan Hai

Where is the moving spirit of my life?
The thunder‐bolt, the harvest of my life?

Maqam Iss Ke Hai Dil Ki Khalwaton Mein
Khuda Jane Maqam-e-Dil Kahan Hai!

His place is in the solitude of the heart,
But I know not the place of the heart within.

————————–

Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button