Zinda Qowwat The Jahan May Yahi Toheed Kabhi

توحيد

زندہ قوت تھی جہاں ميں يہی توحيد کبھی
آج کيا ہے، فقط اک مسئلۂ علم کلام

روشن اس ضو سے اگر ظلمت کردار نہ ہو
خود مسلماں سے ہے پوشيدہ مسلماں کا مقام

ميں نے اے مير سپہ! تيری سپہ ديکھی ہے
‘قل ھو اللہ، کی شمشير سے خالی ہيں نيام

آہ! اس راز سے واقف ہے نہ ملا، نہ فقيہ
وحدت افکار کی بے وحدت کردار ہے خام

قوم کيا چيز ہے، قوموں کی امامت کيا ہے
اس کو کيا سمجھيں يہ بيچارے دو رکعت کے امام

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے