Na Ahl Ko Hasil Hay Kbhi Qowwat o Jabroot

تقدير

نااہل کو حاصل ہے کبھی قوت و جبروت
ہے خوار زمانے ميں کبھی جوہر ذاتی

شايد کوئی منطق ہو نہاں اس کے عمل ميں
تقدير نہيں تابع منطق نظر آتی

ہاں، ايک حقيقت ہے کہ معلوم ہے سب کو
تاريخ امم جس کو نہيں ہم سے چھپاتی

‘ہر لحظہ ہے قوموں کے عمل پر نظر اس کی
براں صفت تيغ دو پيکر نظر اس کی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے