Home / علامہ اقبال شاعری / زاغ کہتا ہے نہايت بدنما ہيں تيرے پر
Zaag Khta Hy Nihayat Bud Numa Hain Tery Per

زاغ کہتا ہے نہايت بدنما ہيں تيرے پر

زاغ کہتا ہے نہايت بدنما ہيں تيرے پر
شپرک کہتي ہے تجھ کو کور چشم و بے ہنر
ليکن اے شہباز! يہ مرغان صحرا کے اچھوت
ہيں فضائے نيلگوں کے پيچ و خم سے بے خبر

ان کو کيا معلوم اس طائر کے احوال و مقام
روح ہے جس کي دم پرواز سر تا پا نظر

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے