Paani Bhe Musakhhar Hay, Hawa Bhe Hy Musakhhar

جمعيت اقوام مشرق

پاني بھي مسخر ہے ، ہوا بھي ہے مسخر
کيا ہو جو نگاہ فلک پير بدل جائے
ديکھا ہے ملوکيت افرنگ نے جو خواب
ممکن ہے کہ اس خواب کي تعبير بدل جائے
طہران ہو گر عالم مشرق کا جينوا
شايد کرہ ارض کي تقدير بدل جائے

—————-

بھوپال(شيش محل) ميں لکھے گئے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے