Kal Sahil e Darya Ye Kha Mjhsay Khizer Nay

کافر و مومن

کل ساحل دريا پہ کہا مجھ سے خضر نے
تو ڈھونڈ رہا ہے سم افرنگ کا ترياق؟
اک نکتہ مرے پاس ہے شمشير کی مانند
برندہ و صيقل زدہ و روشن و براق

کافر کی يہ پہچان کہ آفاق ميں گم ہے
مومن کی يہ پہچان کہ گم اس ميں ہيں آفاق

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے