Home / علامہ اقبال شاعری / با ل جبر یل / با ل جبر یل - منظو ما ت / قطعہ- کل اپنے مريدوں سے کہا پير مغاں نے

قطعہ- کل اپنے مريدوں سے کہا پير مغاں نے

کل اپنے مريدوں سے کہا پير مغاں نے
قيمت ميں يہ معني ہے درناب سے دہ چند
زہراب ہے اس قوم کے حق ميں مےء افرنگ
جس قوم کے بچے نہيں خوددار و ہنرمند

———————-

Transliteration

Kal Apne Mureedon Se Kaha Peer-e-Maghan Ne
Qeemat Mein Ye Maani Hai Dar-e-Naab Se Deh-Chand

The mentor exhorted his. disciples once:
Listen to my words, in value greater than gold:

Zehr Ab Hai Uss Qoum Ke Haq Mein Mei-e-Afrang
Jis Qoum Ke Bache Nahin Khuddar-o-Hunar Mand

The Western wine is poison for the people,
When the offspring knows neither pride nor skill.

————————–

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے