Ye Mahr Hay By Mehri syyad Ka Parda

نفسيات حاکمي

اصلاحات

يہ مہر ہے بے مہري صياد کا پردہ
آئي نہ مرے کام مري تازہ صفيري

رکھنے لگا مرجھائے ہوئے پھول قفس ميں
شايد کہ اسيروں کو گوارا ہو اسيري

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے