Kahan Frishta Tehzeeb Ki Zarort Hay

انتداب

کہاں فرشتہ تہذيب کي ضرورت ہے
نہيں زمانہ حاضر کو اس ميں دشواري
جہاں قمار نہيں ، زن تنک لباس نہيں
جہاں حرام بتاتے ہيں شغل مے خواري
بدن ميں گرچہ ہے اک روح ناشکيب و عميق
طريقہ اب و جد سے نہيں ہے بيزاري
جسور و زيرک و پردم ہے بچہ بدوي
نہيں ہے فيض مکاتب کا چشمہ جاري

نظروران فرنگي کا ہے يہي فتوي
وہ سرزميں مدنيت سے ہے ابھي عاري

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے