Tag Archives: Asar Kare Na Kare

اثر کرے نہ کرے ، سن تو لے مری فرياد

Asar Kare Na Kare, Sun To Le Meri Faryad

اثر کرے نہ کرے ، سن تو لے مری فرياد نہيں ہے داد کا طالب يہ بندۂ آزاد يہ مشت خاک ، يہ صرصر ، يہ وسعت افلاک کرم ہے يا کہ ستم تيری لذت ايجاد ٹھہر سکا نہ ہوائے چمن ميں خيمۂ گل يہی ہے فصل بہاری ، يہی …

Read More »