Anjum Ki Fiza Tak Na Hoi Mere Rasai

نسيم و شبنم

نسيم

انجم کي فضا تک نہ ہوئي ميري رسائي
کرتي رہي ميں پيرہن لالہ و گل چاک
مجبور ہوئي جاتي ہوں ميں ترک وطن پر
بے ذوق ہيں بلبل کي نوا ہائے طرب ناک
دونوں سے کيا ہے تجھے تقدير نے محرم
خاک چمن اچھي کہ سرا پردہ افلاک!

شبنم

کھينچيں نہ اگر تجھ کو چمن کے خس و خاشاک
گلشن بھي ہے اک سر سرا پردہ افلاک

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے