Ho Halqa e Yaaran To BReesham Ki Trha Narem

مومن

دنيا ميں

ہو حلقہ ياراں تو بريشم کی طرح نرم
رزم حق و باطل ہو تو فولاد ہے مومن
افلاک سے ہے اس کی حريفانہ کشاکش
خاکی ہے مگر خاک سے آزاد ہے مومن
جچتے نہيں کنجشک و حمام اس کی نظر ميں
جبريل و سرافيل کا صياد ہے مومن

(جنت ميں)

کہتے ہيں فرشتے کہ دل آويز ہے مومن
حوروں کو شکايت ہے کم آميز ہے مومن
———————

بھوپال(شيش محل) ميں لکھے گئے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے