Ay Kh Hay Zeer e Faleq Misal Shareer Tere Namood

وجود

اے کہ ہے زير فلک مثل شرر تيري نمود
کون سمجھائے تجھے کيا ہيں مقامات وجود

گر ہنر ميں نہيں تعمير خودي کا جوہر
وائے صورت گري و شاعري و ناے و سرود

مکتب و مے کدہ جز درس نبودن ندہند
بودن آموز کہ ہم باشي و ہم خواہي بود

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے