Home / علامہ اقبال شاعری / با نگ درا / بانگ درا (حصہ سوم) / با نگ درا – غز ليات – (حصہ سوم)

با نگ درا – غز ليات – (حصہ سوم)

با نگ درا – غز ليات – (حصہ سوم) Archives – Urdu Poetry Library

اے باد صبا! کملي والے سے جا کہيو پيغام مرا

Aay Baad e Saba! Kamli Waly Say Jaa Kahiu Paigham Mera

اےباد صبا! کملي والے سے جا کہيو پيغام مرا قبضےسے امت بيچاري کے ديں بھي گيا، دنيا بھي گئي يہموج پريشاں خاطر کو پيغام لب ساحل نے ديا ہےدور وصال بحر بھي، تو دريا ميں گھبرا بھي گئي! عزتہے محبت کي قائم اے قيس! حجاب محمل سے محملجو گيا عزت …

Read More »

يہ سرود قمري و بلبل فريب گوش ہے

Ye Sarood Qamri o Bulbul Fareeb Goosh Hay

يہ سرود قمري و بلبل فريب گوش ہے باطن ہنگامہ آباد چمن خاموش ہے تيرے پيمانوں کا ہے يہ اے مےء مغرب اثر خندہ زن ساقي ہے، ساري انجمن بے ہوش ہے دہر کے غم خانے ميں تيرا پتا ملتا نہيں جرم تھا کيا آفرينش بھي کہ تو روپوش ہے آہ! دنيا دل سمجھتي ہے جسے، وہ …

Read More »

نالہ ہے بلبل شوريدہ ترا خام ابھي

Nala Hay Bulbul Shoridah Tera Kham Abi

نالہ ہے بلبل شوريدہ ترا خام ابھي اپنے سينے ميں اسے اور ذرا تھام ابھي پختہ ہوتي ہے اگر مصلحت انديش ہو عقل عشق ہو مصلحت انديش تو ہے خام ابھي بے خطر کود پڑا آتش نمردو ميں عشق عقل ہے محو تماشائے لب بام ابھي عشق فرمودئہ قاصد سے سبک گام عمل  عقل سمجھي ہي نہيں معني …

Read More »

پردہ چہرے سے اُٹھا ، انجمن آرائی کر

Pardah Chahry Say Otha, Anjuman Arai Kr

پردہ چہرے سے اُٹھا ، انجمن آرائی کر چشمِ مَہْر و مَہ و انجم کو تماشائی کر تو جو بجلی ہے تو يہ چَشمک ِپنہاں کب تک بے حِجابانہ مرے دل سے شناسائی کر نَفَسِ گرم کی تاثير ہے اعجازِ حيات  تيرے سينے ميں اگر ہے تو مسيحائی کر کب تلک طور پہ دَریوزَہ گَری مِثلِ کليم …

Read More »

پھر باد بہار آئي ، اقبال غزل خواں ہو

Phir Baad e Bahar Aai, Iqbal Ghazal Khawan Howa

پھر باد بہار آئي ، اقبال غزل خواں ہو غنچہ ہے اگر گل ہو ، گل ہے تو گلستاں ہو تو خاک کي مٹھي ہے ، اجزا کي حرارت سے برہم ہو، پريشاں ہو ، وسعت ميں بياباں ہو تو جنس محبت ہے ، قيمت ہے گراں تيري کم مايہ …

Read More »

کبھی اے حقيقتِ منتظر نظر آ لِباس ِمجاز ميں

Kabi Aay Haqiqat e Mutazar Aa Libas e Majaz Main

کبھی اے حقيقتِ منتظر نظر آ لِباس ِمجاز ميں کہ ہزاروں سجدے تڑپ رہے ہيں مری جبينِ نياز ميں طَرَب آشنائے خروش ہو، تو  نوا ہے محرم گوش ہو وہ سُرُود کيا کہ چھپا  ہوا  ہو سکوت پردۂ   ساز ميں تو بچابچا کے نہ رکھ اسے،  ترا آئنہ ہے وہ آئنہ کہ شِکَسْتَہ ہو تو عزيز …

Read More »

تہ دام بھي غزل آشنا رہے طائران چمن تو کيا

Ta Dam Ghazal Aashna Rahy Tairaan

تہ دام بھي غزل آشنا رہے طائران چمن تو کيا جو فغاں دلوں ميں تڑپ رہي تھي، نوائے زير لبي رہي ترا جلوہ کچھ بھي تسلي دل ناصبور نہ کر سکا وہ گريہ سحري رہا ، وہي آہ نيم شبي رہي نہ خدا رہا نہ صنم رہے ، نہ رقيب دير حرم رہے نہ رہي کہيں …

Read More »

گرچہ تو زنداني اسباب ہے

Garcha Tu Zindagani Asbab Hay

گرچہ تو زنداني اسباب ہے قلب کو ليکن ذرا آزاد رکھ عقل کو تنقيد سے فرصت نہيں عشق پر اعمال کي بنياد رکھ اے مسلماں! ہر گھڑي پيش نظر آيہ ‘لا يخلف الميعاد’ رکھ يہ ‘لسان العصر’ کا پيغام ہے ‘ان وعد اللہ حق” ياد رکھ”

Read More »