Home / علامہ اقبال شاعری / با ل جبر یل / بال جبریل (حصہ اول)

بال جبریل (حصہ اول)

Bal-i Jibril (Gabriel’s Wing) continues from Bang-i Dara. Some of the verses had been written when Iqbal visited Britain, Italy, Egypt, Palestine, France, Spain and Afghanistan.

The work contains 15 ghazals addressed to God and 61 ghazals and 22 quatrains dealing the ego, faith, love, knowledge, the intellect and freedom. The poet recalls the past glory of Muslims as he deals with contemporary political problems.

يارب ! يہ جہان گزراں خوب ہے ليکن

Ya Rab! Ye Jahan-e-Guzran Khoob Hai Lekin

يارب! يہ جہان گزراں خوب ہے ليکن کيوں خوار ہيں مردان صفا کيش و ہنرمند گو اس کی خدائی ميں مہاجن کا بھی ہے ہاتھ دنيا تو سمجھتی ہے فرنگی کو خداوند تو برگ گيا ہے ندہی اہل خرد را او کشت گل و لالہ بنجشد بہ خرے چند حاضر …

Read More »

اک دانش نورانی ، اک دانش برہانی

Ek Danish-e-Noorani, Ek Danish-e-Burhani

اک دانش نورانی ، اک دانش برہانی ہے دانش برہانی ، حيرت کی فراوانی اس پيکر خاکی ميں اک شے ہے ، سو وہ تيری ميرے ليے مشکل ہے اس شے کی نگہبانی اب کيا جو فغاں ميری پہنچی ہے ستاروں تک تو نے ہی سکھائی تھی مجھ کو يہ …

Read More »

اپنی جولاں گاہ زير آسماں سمجھا تھا ميں

Apni Jolangah Zair-e-Asman Samjha Tha Mein

اپنی جولاں گاہ زير آسماں سمجھا تھا ميں آب و گل کے کھيل کو اپنا جہاں سمجھا تھا ميں بے حجابی سے تری ٹوٹا نگاہوں کا طلسم اک ردائے نيلگوں کو آسماں سمجھا تھا ميں کارواں تھک کر فضا کے پيچ و خم ميں رہ گيا مہروماہ و مشتری کو …

Read More »

وہی ميری کم نصيبی ، وہی تيری بے نيازی

Wohi Meri Kam Naseebi, Wohi Teri Be Niazi

وہی ميری کم نصيبی ، وہی تيری بے نيازی ميرے کام کچھ نہ آيا يہ کمال نے نوازی ميں کہاں ہوں تو کہاں ہے ، يہ مکاں کہ لامکاں ہے؟ يہ جہاں مرا جہاں ہے کہ تری کرشمہ سازی اسی کشمکش ميں گزريں مری زندگی کی راتيں کبھی سوزو ساز …

Read More »

ضمير لالہ مے لعل سے ہوا لبريز

Zameer-e-Lala Mai’ay La’al Se Huwa Labraiz

ضمير لالہ مے لعل سے ہوا لبريز اشارہ پاتے ہی صوفی نے توڑ دی پرہيز بچھائی ہے جو کہيں عشق نے بساط اپنی کيا ہے اس نے فقيروں کو وارث پرويز پرانے ہيں يہ ستارے ، فلک بھی فرسودہ جہاں وہ چاہيے مجھ کو کہ ہو ابھی نوخيز کسے خبر …

Read More »

تجھے ياد کيا نہيں ہے مرے دل کا وہ زمانہ

Tujhe Yaad Kya Nahin Hai Mere Dil Ka Woh Zamana

تجھے ياد کيا نہيں ہے مرے دل کا وہ زمانہ وہ ادب گہ محبت ، وہ نگہ کا تازيانہ يہ بتان عصر حاضر کہ بنے ہيں مدرسے ميں نہ ادائے کافرانہ ، نہ تراش آزرانہ نہيں اس کھلی فضا ميں کوئی گوشۂ فراغت يہ جہاں عجب جہاں ہے ، نہ …

Read More »

متاع بے بہا ہے درد و سوز آرزو مندی

Mataa-e-Bebaha Hai Dard-o-Souz-e-Arzoo-Mandi

متاع بے بہا ہے درد و سوز آرزو مندی مقام بندگی دے کر نہ لوں شان خداوندی ترے آزاد بندوں کی نہ يہ دنيا ، نہ وہ دنيا يہاں مرنے کی پابندی ، وہاں جينے کی پابندی حجاب اکسير ہے آوارہ کوئے محبت کو ميری آتش کو بھڑکاتی ہے تيری …

Read More »

لا پھر اک بار وہی بادہ و جام اے ساقی

La Phir Ek Baar Wohi Bada-o-Jaam Ae Saqi

لا پھر اک بار وہی بادہ و جام اے ساقی ہاتھ آ جائے مجھے ميرا مقام اے ساقی تين سو سال سے ہيں ہند کے ميخانے بند اب مناسب ہے ترا فيض ہو عام اے ساقی مری مينائے غزل ميں تھی ذرا سی باقی شيخ کہتا ہے کہ ہے يہ …

Read More »

دگرگوں ہے جہاں ، تاروں کی گردش تيز ہے ساقی

Dirgargoon Hai Jahan, Taaron Ki Garzish Taiz Hai Saqi

دگرگوں ہے جہاں ، تاروں کی گردش تيز ہے ساقی دل ہر ذرہ ميں غوغائے رستا خيز ہے ساقی متاع دين و دانش لٹ گئی اللہ والوں کی يہ کس کافر ادا کا غمزئہ خوں ريز ہے ساقی وہی ديرينہ بيماری ، وہی نا محکمی دل کی علاج اس کا …

Read More »

پريشاں ہوکے ميری خاک آخر دل نہ بن جائے

Preshan Ho Ke Meri Khaak Akhir Dil Na Ban Jaye

پريشاں ہوکے ميری خاک آخر دل نہ بن جائے جو مشکل اب ہے يارب پھر وہی مشکل نہ بن جائے نہ کر ديں مجھ کو مجبور نوا فردوس ميں حوريں مرا سوز دروں پھر گرمی محفل نہ بن جائے کبھی چھوڑی ہوئی منزل بھی ياد آتی ہے راہی کو کھٹک …

Read More »

کيا عشق ايک زندگئ مستعار کا

Kya Ishq Aik Zindagi-e-Mastaar Ka

کيا عشق ايک زندگئ مستعار کا کيا عشق پائدار سے ناپائدار کا وہ عشق جس کی شمع بجھا دے اجل کی پھونک اس ميں مزا نہيں تپش و انتظار کا ميری بساط کيا ہے ، تب و تاب يک نفس شعلے سے بے محل ہے الجھنا شرار کا کر پہلے …

Read More »

اثر کرے نہ کرے ، سن تو لے مری فرياد

Asar Kare Na Kare, Sun To Le Meri Faryad

اثر کرے نہ کرے ، سن تو لے مری فرياد نہيں ہے داد کا طالب يہ بندۂ آزاد يہ مشت خاک ، يہ صرصر ، يہ وسعت افلاک کرم ہے يا کہ ستم تيری لذت ايجاد ٹھہر سکا نہ ہوائے چمن ميں خيمۂ گل يہی ہے فصل بہاری ، يہی …

Read More »

گيسوئے تاب دار کو اور بھی تاب دار کر

Gaisuay Tabdar Ko Aur Bhi Tabdar Kar

گيسوئے تاب دار کو اور بھی تاب دار کر ہوش و خرد شکار کر ، قلب و نظر شکار کر عشق بھی ہو حجاب ميں ، حسن بھی ہو حجاب ميں يا تو خود آشکار ہو يا مجھے آشکار کر تو ہے محيط بے کراں ، ميں ہوں ذرا سی …

Read More »

اگر کج رو ہيں انجم ، آسماں تيرا ہے يا ميرا

Agar Kaj Ro Hain Anjum Asman Tera Hai Ya Mera

اگر کج رو ہيں انجم ، آسماں تيرا ہے يا ميرا مجھے فکر جہاں کيوں ہو ، جہاں تيرا ہے يا ميرا؟ اگر ہنگامہ ہائے شوق سے ہے لامکاں خالی خطا کس کی ہے يا رب! لامکاں تيرا ہے يا ميرا؟ اسے صبح ازل انکار کی جرات ہوئی کيونکر مجھے …

Read More »

ميری نوائے شوق سے شور حريم ذات ميں

Meri Nawa-e-Shauk Se Shor Hareem-e-Zaat Mein

ميری نوائے شوق سے شور حريم ذات ميں غلغلہ ہائے الاماں بت کدۂ صفات ميں حور و فرشتہ ہيں اسير ميرے تخيلات ميں ميری نگاہ سے خلل تيری تجليات ميں گرچہ ہے ميری جستجو دير و حرم کی نقش بند ميری فغاں سے رستخيز کعبہ و سومنات ميں گاہ مری …

Read More »